اردو غزلیاتشعر و شاعریمحمد ابراہیم ذوق

معلوم جو ھوتا ھميں انجام محبت

ابراہیم ذوق کی اردو غزل

معلوم جو ھوتا ھميں انجام محبت
ليتے نہ کبھي بھول کے ھم نام محبت

ھيں داغ محبت درم و دام محبت
مثردہ روز اڑا ديتا ھے وھ کرکے تصديق

ھر روز اڑا ديتا ھے وہ کرکے تصديق
دو چار اسير قفس دام محبت

مانند کباب آگے پہ گرتے ھيں ھميشہ
دل سوز ترے بستر آرام محبت

کاسہ ميں فلک کے نہ رھے نام کو زہر آب
دہر کہينچے اگر تشنہ لب جام محبت

کي جس سے رہ و سم محبت اسے مارا
پيغام قضا ھے ترا پيغام محبت

نے زھد سے ھے کام نہ زاھد سے کہ ھم تو
ھيں بادھ کش عشق و مئے جام محبت

ايمان کو گرو رکہ کے نہ يوں کفر کو لے مول
کافر نہو گرويدھ اسلام محبت

کہتي تہي وفا کناں نعش پہ مري
سونپا کسے تو نے مجھے ناکام محبت

معراج سمجھ ذوق تو قاتل کي سناں کو
چڑھ سر کے بل سے زينے پہ تا بام محبت​

سائٹ ایڈمن

’’سلام اردو ‘‘،ادب ،معاشرت اور مذہب کے حوالے سے ایک بہترین ویب پیج ہے ،جہاں آپ کو کلاسک سے لے جدیدادب کا اعلیٰ ترین انتخاب پڑھنے کو ملے گا ،ساتھ ہی خصوصی گوشے اور ادبی تقریبات سے لے کر تحقیق وتنقید،تبصرے اور تجزیے کا عمیق مطالعہ ملے گا ۔ جہاں معاشرتی مسائل کو لے کر سنجیدہ گفتگو ملے گی ۔ جہاں بِنا کسی مسلکی تعصب اور فرقہ وارنہ کج بحثی کے بجائے علمی سطح پر مذہبی تجزیوں سے بہترین رہنمائی حاصل ہوگی ۔ تو آئیے اپنی تخلیقات سے سلام اردوکے ویب پیج کوسجائیے اور معاشرے میں پھیلی بے چینی اور انتشار کو دورکیجیے کہ معاشرے کو جہالت کی تاریکی سے نکالنا ہی سب سے افضل ترین جہاد ہے ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ اشاعتیں

سلام اردو سے ​​مزید
Close
Back to top button