- Advertisement -

دست ربّ قدیر کی جانب

عارف امام کی اردو غزل

دست ربّ قدیر کی جانب
چلئے اپنے امیر کی جانب

جب بیاں کیجے معنئ مولا
دیکھ لیجے ضمیر کی جانب

آرہا ہے فلک سے ہنستا ہوا
ایک پتھر شریر کی جانب

لو بچھاتا ہوں جانمازِ وِلا
رُخ کیا ہے غدیر کی جانب

رزمِ خیبر سے دیکھتے ہیں رسول
سوئے طیبہ نصیر کی جانب

کھینچ لیتا ہے تارِ اشکِ عزا
ہم کو اجرِ کثیر کی جانب

اے لسانِ علی و عینِ عظیم
اک نظر اس فقیر کی جانب

اک نگاہِ کرم حسینِ کریم
اپنے برّ صغیرکی جانب

کیسے ہوتے ہیں پیشوائے سخن
دیکھ انیس و دبیر کی جانب

عارف امام

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

سلام اردو سے منتخب سلام
عارف امام کی اردو غزل