- Advertisement -

Ay Dost Mitt Gaya Hoon

Urdu Ghazal By Hafeez Jalandheri

غزل ​
حفیظ جالندھری​

اے دوست مِٹ گیا ہوں فنا ہو گیا ہوں میں ​
اس دردِ دوستی کی دوا ہو گیا ہوں میں ​

قائم کِیا ہے میں نے فنا کے وجود کو ​
دنیا سمجھ رہی ہے فنا ہو گیا ہوں میں ​

نا آشنا ہیں رتبۂ دیوانگی سے دوست ​
کمبخت جانتے نہیں، کیا ہو گیا ہوں میں​

ہنسنے کا اعتبار، نہ رونے کا اعتبار​
کِیا زندگی ہے جس پہ فدا ہو گیا ہوں میں ​

ہمّت بُلند تھی مگر افتاد دیکھنا !​
چپ چاپ آج محوِ دُعا ہو گیا ہوں میں​

یہ زندگی فریبِ مسلسل نہ ہو کہیں​
شاید اسیرِ دامِ بَلا ہو گیا ہوں میں ​

اُٹّھا ہوں اک جہانِ خموشی لئے ہوئے​
ٹُوٹے ہوئے دِلوں کی صدا ہو گیا ہوں میں ​

حفیظ جالندھری ​

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

سلام اردو سے منتخب سلام
A Urdu Ghazal By Hafeez Jalandheri