- Advertisement -

Ajeeb Khawab

Urdu Poetry by Rafique Lodhi

عجیب خواب اور عجب خیال دیکھتے ہوئے
میں بن رہا ہوں تیرے خدو خال دیکھتے ہوئے

پرند شاخ پر ہیں اور تتلیاں گلاب پر
میں رو پڑا ہوں ہجر میں وصال دیکھتے ہوئے

تو پہلے بے وفا ہوا ہے اور تیرے بعد میں
بدل رہا ہوں چال تیری چال دیکھتے ہوئے

تو لمحہ بن کے رک گیا ہے دھڑکنوں کے درمیاں
گزر رہے ہیں تجھ کو ماہ وسال دیکھتے ہوئے

نہ پوچھ احتیاط کس قدر ہے اس اُڑان میں
میں اُڑ رہا ہوں چار سمت جال دیکھتے ہوئے

خدا کرے کہ عید اصل میں تمہاری عید ہو
دعائیں مانگتا ہوں میں ہلال دیکھتے ہوئے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

سلام اردو سے منتخب سلام
A Urdu Poetry by Rafique Lodhi