A True Salam To Urdu Literature

Pehle Qadmoon Pe Mujhe

A Ghazal By Munir Jafri

پہلے قدموں پہ مجھے قیس نے ارشاد کیا
مرشدی آپ کو صحرا میں بہت یاد کیا

بعد میں جا کے پرندوں کو زباں دی اس نے
پہلے اک پیڑ میں آواز کو آباد کیا

اسم کو جسم سے آلودہ نہیں ہونے دیا
دودھ کو دودھ سمجھنے کا سبق یاد کیا

رنگ اور پھول سے خوشبو کا تصور لے کر
میں نے احساس سے تصویر کو ایجاد کیا

اک ہی دریا سے بجھائی ہے ضرورت اپنی
اک ہی درویش کو تا عمر ہے استاد کیا

اس نے یوں خود کو نکالا ہے مرے دل سے منیر
جیسے بازو کسی تعویذ سے آزاد کیا

منیر جعفری

Leave A Reply

Your email address will not be published.

Recommended Salam
A Nice Ghazal By Munir Jafri