آپ کا سلاماردو غزلیاتاظہر فراغشعر و شاعری

باغ سے جھولے اتر گئے

اظہر فراغ کی ایک اردو غزل

باغ سے جھولے اتر گئے

سندر چہرے اتر گئے

لٹک گئے دیوار سے ہم

سیڑھی والے اتر گئے

گھر میں کس کا پاؤں پڑا

چھت کے جالے اتر گئے

بھینٹ چڑھے تم عجلت کی

پیڑ سے کچے اتر گئے

وصل کے ایک ہی جھونکے میں

کان سے بالے اتر گئے

بھاگوں والی بستی تھی

جہاں پرندے اتر گئے

اک دن ایسا ہوش آیا

سارے نشے اتر گئے

اظہر فراغ

سائٹ ایڈمن

’’سلام اردو ‘‘،ادب ،معاشرت اور مذہب کے حوالے سے ایک بہترین ویب پیج ہے ،جہاں آپ کو کلاسک سے لے جدیدادب کا اعلیٰ ترین انتخاب پڑھنے کو ملے گا ،ساتھ ہی خصوصی گوشے اور ادبی تقریبات سے لے کر تحقیق وتنقید،تبصرے اور تجزیے کا عمیق مطالعہ ملے گا ۔ جہاں معاشرتی مسائل کو لے کر سنجیدہ گفتگو ملے گی ۔ جہاں بِنا کسی مسلکی تعصب اور فرقہ وارنہ کج بحثی کے بجائے علمی سطح پر مذہبی تجزیوں سے بہترین رہنمائی حاصل ہوگی ۔ تو آئیے اپنی تخلیقات سے سلام اردوکے ویب پیج کوسجائیے اور معاشرے میں پھیلی بے چینی اور انتشار کو دورکیجیے کہ معاشرے کو جہالت کی تاریکی سے نکالنا ہی سب سے افضل ترین جہاد ہے ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ اشاعتیں

سلام اردو سے ​​مزید
Close
Back to top button