اردو نظمرام پرساد بسملشعر و شاعری

نہ چاہوں مان دنیا میں

رام پرساد بسمل کی ایک اردو نظم

نہ چاہوں مان دنیا میں، نہ چاہوں سورگ کو جانا
مجھے ور دے یہی ماتا رہوں بھارت پے دیوانہ

کروں میں قوم کی سیوا پڑے چاہے کروڑوں دکھ
اگر پھر جنم لوں آکر تو بھارت میں ہی ہو آنا

لگا رہے پریم ہندی میں، پڑھونں ہندی لکھوں ہندی
چلن ہندی چلوں، ہندی پہرنا، اوڑھنا خانا

بھون میں روشنی میرے رہے ہندی چراگوں کی
سودیشی ہی رہے باجا، بجانا، راگ کا گانا

لگیں اس دیش کے ہی ارتھ میرے دھرم، ودیا، دھن
کروں میں پران تک ارپن یہی پرن ستی ہے ٹھانا

نہیں کچھ غیر-ممکن ہے جو چاہو دل سے ‘بسمل’ تم
اٹھا لو دیش ہاتھوں پر ن سمجھو اپنا بیگانہ

 

رام پرساد بسمل

سائٹ ایڈمن

’’سلام اردو ‘‘،ادب ،معاشرت اور مذہب کے حوالے سے ایک بہترین ویب پیج ہے ،جہاں آپ کو کلاسک سے لے جدیدادب کا اعلیٰ ترین انتخاب پڑھنے کو ملے گا ،ساتھ ہی خصوصی گوشے اور ادبی تقریبات سے لے کر تحقیق وتنقید،تبصرے اور تجزیے کا عمیق مطالعہ ملے گا ۔ جہاں معاشرتی مسائل کو لے کر سنجیدہ گفتگو ملے گی ۔ جہاں بِنا کسی مسلکی تعصب اور فرقہ وارنہ کج بحثی کے بجائے علمی سطح پر مذہبی تجزیوں سے بہترین رہنمائی حاصل ہوگی ۔ تو آئیے اپنی تخلیقات سے سلام اردوکے ویب پیج کوسجائیے اور معاشرے میں پھیلی بے چینی اور انتشار کو دورکیجیے کہ معاشرے کو جہالت کی تاریکی سے نکالنا ہی سب سے افضل ترین جہاد ہے ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ اشاعتیں

سلام اردو سے ​​مزید
Close
Back to top button