- Advertisement -

Mein Jagoon Saari Rein

An Urdu Nazam By Sahir Ludhianvi

میں جاگوں ساری رین سجن تم سو جاؤ

گیتوں میں چھپا لوں بین سجن تم سو جاؤ

شام ڈھلے سے بھور بھئے تک جاگ کے جب کٹتی ہے گھڑیاں

مدھر ملن کی اوس میں بس کر کھلتی ہیں جب جیون کی کلیاں

آج نہیں وہ رین سجن تم سو جاؤ

پھیکی پڑ گئی چاند کی جیوتی دھندلے پڑ گئے دیپ گگن کے

سو گئیں سندر سیج کی کلیاں سو گئے کھلتے بھاگ دلہن کے

کھل کر رولیں نین سجن تم سو جاؤ

جاگ کے تن کی اگنی سو گئی بڑھ کے تھم گئی من کی ہلچل

اپنا گھونگھٹ آپ الٹ کر کھول دی میں پاؤں کی پائل

اب ہے چین ہی چین سجن تم سو جاؤ

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

سلام اردو سے منتخب سلام
An Urdu Ghazal By Sahir Ludhianvi