آپ کا سلاماردو نظمشعر و شاعریلبنیٰ مقبول غنیمؔ

عشق کی مسافتیں

لبنیٰ مقبول غنیمؔ کی ایک اردو نظم

عشق کی مسافتیں

گھڑی بھر کی نگاہ تھی
بس اُسی اِک نگاہ میں
ملیں عشق کی عنایتیں
رہیں کم ہی کچھ سخاوتیں
دبے پاؤں چلتے ہوئے
لمحہ لمحہ طے کریں
طویل عشق کی مسافتیں
عشقِ یارکی لطافتیں
گماں کی منزلوں سے
عشق نے محسوس کیں
وہی ماتمی حسرتیں
وہی شکستہ رقابتیں
بس عشق کو ہی
کبھی نہ مل سکیں
دیدارِ یار کی پر لطف ساعتیں….
قربِ یار کی اجازتیں
عمر بھر بھٹکتی رہیں
خاموش پنپتی رہیں
یارِ من سے شکایتیں
وضاحتیں ہی وضاحتیں

لبنیٰ مقبول غنیمؔ

لبنیٰ غنیم

" مختصر تعارف " لبنیٰ مقبول، کراچی سے تعلق، شاعرہ،کالم نویس، اور افسانہ نگار ہیں- بزنس منیجمنٹ، معاشیات، اور انگلش لٹریچر میں ڈگری حاصل کرچکی ہیں- درس و تدریس سے وابستگی رہی- انسانی نفسیات میں گہری دلچسپی ہے ۔ انسان میں چھپی صلاحیتوں کو دریافت کرنے کا شوق ہے ۔ اردو، انگریزی کے علاوہ فرینچ لینگویج پر بھی عبور رکھتی ہیں- چارہ گر بھی وہی کے نام سے شعری مجموعہ زیر طبع ہے اور اس کے علاوہ سوشل میڈیا پر ایک بہت مقبول سلسلہ مستانہ لکھ رہی ہیں جسے جلد ناول کی شکل دینے کا ارادہ ہے-

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ اشاعتیں

Back to top button