اردو شاعریاردو غزلیاتڈاکٹر صباحت عاصم واسطی

بنائی ہے تری تصویر میں نے ڈرتے ہوئے

ڈاکٹر صباحت عاصم واسطی کی ایک اردو غزل

بنائی ہے تری تصویر میں نے ڈرتے ہوئے

لرز رہا تھا مرا ہاتھ رنگ بھرتے ہوئے

میں انہماک میں یہ کس مقام تک پہنچا

تجھے ہی بھول گیا تجھ کو یاد کرتے ہوئے

نظام کن کے سبب انتشار ہے مربوط

یہ کائنات سمٹتی بھی ہے بکھرتے ہوئے

کہیں کہیں تو زمیں آسماں سے اونچی ہے

یہ راز مجھ پہ کھلا سیڑھیاں اترتے ہوئے

ہمیں یہ وقت ڈراتا کچھ اس طرح بھی ہے

ٹھہر نہ جائے کہیں حادثہ گزرتے ہوئے

کچھ اعتبار نہیں اگلی نسل پر ان کو

وصیتیں نہیں کرتے یہ لوگ مرتے ہوئے

ہر ایک ضرب تو ہوتی نہیں عیاں عاصمؔ

ہزار نقش ہوئے مندمل ابھرتے ہوئے

ڈاکٹر صباحت عاصم واسطی

سائٹ ایڈمن

’’سلام اردو ‘‘،ادب ،معاشرت اور مذہب کے حوالے سے ایک بہترین ویب پیج ہے ،جہاں آپ کو کلاسک سے لے جدیدادب کا اعلیٰ ترین انتخاب پڑھنے کو ملے گا ،ساتھ ہی خصوصی گوشے اور ادبی تقریبات سے لے کر تحقیق وتنقید،تبصرے اور تجزیے کا عمیق مطالعہ ملے گا ۔ جہاں معاشرتی مسائل کو لے کر سنجیدہ گفتگو ملے گی ۔ جہاں بِنا کسی مسلکی تعصب اور فرقہ وارنہ کج بحثی کے بجائے علمی سطح پر مذہبی تجزیوں سے بہترین رہنمائی حاصل ہوگی ۔ تو آئیے اپنی تخلیقات سے سلام اردوکے ویب پیج کوسجائیے اور معاشرے میں پھیلی بے چینی اور انتشار کو دورکیجیے کہ معاشرے کو جہالت کی تاریکی سے نکالنا ہی سب سے افضل ترین جہاد ہے ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ اشاعتیں

سلام اردو سے ​​مزید
Close
Back to top button