اردو نظمشعر و شاعریشہزاد نیّرؔ

ہائبرنیشن

شہزاد نیّرؔ کی اردو نظم

ہم سب ہائبرنیشن(Hibernation ) میں ہیں ؟

"ہائبرنیشن( سرما خوابی) : بعض جانوروں کا زیر زمین جا کر نیم مردہ سی حالت میں شدید سردی کا موسم گذارنا "

ہائبرنیشن

میں صدیوں سے تنہا
گھٹن میں گندھے حبس تاریک میں سانس روکے پڑا ھوں
بدن کے غلیظ اور سیلن زدہ بل میں بے حس و حرکت
نم آلود مٹی میں لتھڑا ھوا ھوں
نہ جانے میں زندہ ھوں
اک تنگ و تاریک مسکن میں ساکن
مرے سرد سینے میں آدھا تنفس
نہ پتلی میں حرکت
نہ آنکھیں ھی روشن!
بدن کے اسی غار میں نیم مردہ
مری ذات ھے
لمبے عرصے کی قیدی!
بدن میں جونہی سانس رکنے لگے
میں سسکتے سسکتے ان آنکھوں کے روزن تک آتا ھوں
اور ڈرتی ڈرتی نگاھوں سے
چوگرد پھیلا سماں دیکھتا ھوں
نہیں……. بل سے باھر کا موسم
|ابھی سازگاری پہ مائل نہیں ھے
ابھی ایسا سورج جہاں کے افق پر نمودار ھونا ھے
جو میری پسلی میں
کرنوں کا نیزہ چبھو کر کہے:
اٹھ کھڑا ھو!

شہزاد نیّرؔ 

سائٹ ایڈمن

’’سلام اردو ‘‘،ادب ،معاشرت اور مذہب کے حوالے سے ایک بہترین ویب پیج ہے ،جہاں آپ کو کلاسک سے لے جدیدادب کا اعلیٰ ترین انتخاب پڑھنے کو ملے گا ،ساتھ ہی خصوصی گوشے اور ادبی تقریبات سے لے کر تحقیق وتنقید،تبصرے اور تجزیے کا عمیق مطالعہ ملے گا ۔ جہاں معاشرتی مسائل کو لے کر سنجیدہ گفتگو ملے گی ۔ جہاں بِنا کسی مسلکی تعصب اور فرقہ وارنہ کج بحثی کے بجائے علمی سطح پر مذہبی تجزیوں سے بہترین رہنمائی حاصل ہوگی ۔ تو آئیے اپنی تخلیقات سے سلام اردوکے ویب پیج کوسجائیے اور معاشرے میں پھیلی بے چینی اور انتشار کو دورکیجیے کہ معاشرے کو جہالت کی تاریکی سے نکالنا ہی سب سے افضل ترین جہاد ہے ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ اشاعتیں

سلام اردو سے ​​مزید
Close
Back to top button