آپ کا سلاماردو غزلیاتشعر و شاعریمقصود وفا

خام ہونے کے انتظار میں ہوں

مقصود وفا کی ایک اردو غزل

خام ہونے کے انتظار میں ہوں

عام ہونے کے انتظار میں ہوں

میں جسے کام ہی نہیں کوئی

کام ہونے کے انتظار میں ہوں

رکھ کے شیشہ و جام سامنے میں

شام ہونے کے انتظار میں ہوں

اپنی گمنام حسرتوں میں وفاؔ

نام ہونے کے انتظار میں ہوں

 

مقصود وفا

مقصود وفا

مقصود وفا کا تعلق فیصل آباد (لائل پور)، پنجاب، پاکستان سے ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ اشاعتیں

Back to top button