- Advertisement -

بس یہی کچھ ہے معجزہ مرے پاس

ایک اردو غزل ندیم بھابھہ

بس یہی کچھ ہے معجزہ مرے پاس

ایک تو ہے اور اک دعا مرے پاس

یہ تری گفتگو کا لمحہ ہے

اس گھڑی ہے مرا خدا مرے پاس

تیرا نعم البدل نہیں کوئی

تو فقط ایک ہی تو تھا مرے پاس

تجھے کچھ وقت چاہئے مری جاں

وقت ہی تو نہیں بچا مرے پاس

میں نے تجھ کو خدا سے مانگا تھا

لوٹ آئی مگر دعا مرے پاس

اب میں جھگڑا کروں تو کس سے کروں

اب تو تو بھی نہیں رہا مرے پاس

اس لیے خود کو زندہ رکھا ہے

تو کبھی لوٹ آئے گا مرے پاس

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

سلام اردو سے منتخب سلام
ایک اردو غزل ندیم بھابھہ