- Advertisement -

نیند تدبیر سب سرِ بازار

ارشاد نیازی کی ایک غزل

نیند تدبیر سب سرِ بازار
خواب تعبیر سب سرِ بازار

قہقہے نوکِ نیزہ سر اور بھیڑ
شام ہمشیر سب سرِ بازار

پارسائی کے اجر کا شکوہ
صبر تاثیر سب سرِ بازار

شور , دھوپ اور تازیانے, سفر
خون شمشیر سب سرِ بازار

وحشتیں, دشت, داستاں اور اشک
پاؤں زنجیر سب سرِ بازار

کون لایا ہے مفلسی کے سبب
نام توقیر سب سرِ بازار

باغ , دربار, طوق, غم , سنت
اور تحریر سب سرِ بازار

لوحِ محفوظ سے الجھتی ہوئی
سرخ تقدیر سب سرِ بازار

اک مصور کا دکھ سناتی ہے
ایک تصویر سب سرِ بازار

فاحشہ, بھوک , بھیڑیے اور جسم
حسن, جاگیر سب سرِ بازار

دیکھ فٹ پاتھ پر پڑے ارشاد
غالب و میر سب سرِ بازار

ارشاد نیازی

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

سلام اردو سے منتخب سلام
کشور ناہید کی ایک نظم