A True Salam To Urdu Literature

Zar-e-Chiragh Sar-e-Aab

A Ghazal By Malik Ateeq

زرِ چراغ سرِ آب رکھ رہا ہوں میں
کنارِ چشم ترا خواب رکھ رہا ہوں میں

یہ دل کا طاق اماؤس کی رات ہے، اس میں
ترے خیال کا مہتاب رکھ رہا ہوں میں

دیارِ جاں میں محبت کے پھول کھلنے لگے
خزاں میں خطۂ شاداب رکھ رہا ہوں میں

جہاں پہ پیاس میں پانی بھی بلبلاتا ہے
اک ایسے دشت کو سیراب رکھ رہا ہوں میں

عتیق مجھ کو نیا راستہ بنانا ہے
چراغ و آئنہ احباب رکھ رہا ہوں میں

Leave A Reply

Your email address will not be published.

Recommended Salam
An Urdu Ghazal By Malik Ateeq