آپ کا سلاماردو شاعریاردو غزلیاتناصر زملؔ

وہ قلم سے اٹھی نوا لکھے گا

ناصر زملؔ کی ایک اردو غزل

وہ قلم سے اٹھی نوا لکھے گا
لکھے گا دردِ دل سدا لکھے گا

ہاتھ خالی ہوں جس کے سب لٹا کے
کیا وہ بھی عشق کو بھلا لکھے گا

اسکے ہاتھوں میں ہے مری قسمت
اب نا جانے وہ کیا سے کیا لکھے گا

تھک چکا ہوں ترے دلاسوں سے اب
آرہا ہوں میں اور تو آ لکھے گا

رمز میری طبیب کیا جانے
وہ تو کچھ گولیاں دوا لکھے گا

رندسے پوچھے گا علاجِ غم
وہ تو پھر جامِ میکدہ لکھے گا

 

ناصر زملؔ

ناصر زملؔ

ناصر زملؔ قلمی نام : زملؔ ضلع : وہاڑی ناصر زملؔ پاکستان ضلع وہاڑی سے تعلق رکھنے والے نوجوان شاعر ہیں ۔ انکا پہلا مجموعہ شاعری جنوری 2024 کو شائع ہوا جس کا نام "سحرِ بیاں" ہے جو " سرائے اُردو پبلیکیشن سیالکوٹ" پر دستیاب ہے ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ اشاعتیں

سلام اردو سے ​​مزید
Close
Back to top button