آپ کا سلاماردو نظمشعر و شاعری

سیاست کو چھوڑو ریاست کو بچالو

خالد راہی کی ایک اردو نظم

سیاست کو چھوڑو ریاست کو بچالو

کچھ وقت کے لئے سیاست سے باز آجائیے

اور ڈوبتی ہوئی ریاست کے پاس آجائیے

اپنی اپنی کرسیوں کو بچانے والوں

وطن عزیز کو کھانے والوں

گھر بار ہمارے ڈوب گئے ہیں

ہاتھوں سے ہمارے،بچے چھوٹ گئے ہیں

ہمارے پاس آہیں ہیں سسکیاں ہیں

اور ساتھ تمھاری جھوٹی تسلیاں ہیں

ہم کہاں ہیں اب تو ہمیں معلوم نہیں

دریا میں ہیں یا سمندر میں معلوم نہیں

چھت آسمان ہے اور پانی پر بسیرا ہے

باقی تو سب طرف بس اندھیرا ہے

تصویریں بھی بن رہی ہیں

ویڈیو بھی چل رہی ہیں

کوئی بچے کی لاش دیکھارہا ہے

کوئی گور دبی زندگی کا ساتھ نبہا رہا ہے

تم کیسے سمجھوگے دکھ درد کے معنی

تم کو تو لگتی ہے یہ سب ایک کہانی

جو ٹھنڈے کمروں میں بیٹھ کر

تم نے اپنے بچوں کو ہے سنانی

ہماری آنکھیں تمھارا تعقب کریں گی

ابر جو رحمت بن کر برستا تو ہے

میسر ہے تمیں زمین شکرمنالو

مل رہا ہے جو وقت تو رب سے نبہا لو

سیاست ہوتی رہی ہے ،پھر ہوتی رہے گی

یہ جنتا رہے گی تو پھر ہوتی رہے گی

خالد راہی 

سائٹ ایڈمن

’’سلام اردو ‘‘،ادب ،معاشرت اور مذہب کے حوالے سے ایک بہترین ویب پیج ہے ،جہاں آپ کو کلاسک سے لے جدیدادب کا اعلیٰ ترین انتخاب پڑھنے کو ملے گا ،ساتھ ہی خصوصی گوشے اور ادبی تقریبات سے لے کر تحقیق وتنقید،تبصرے اور تجزیے کا عمیق مطالعہ ملے گا ۔ جہاں معاشرتی مسائل کو لے کر سنجیدہ گفتگو ملے گی ۔ جہاں بِنا کسی مسلکی تعصب اور فرقہ وارنہ کج بحثی کے بجائے علمی سطح پر مذہبی تجزیوں سے بہترین رہنمائی حاصل ہوگی ۔ تو آئیے اپنی تخلیقات سے سلام اردوکے ویب پیج کوسجائیے اور معاشرے میں پھیلی بے چینی اور انتشار کو دورکیجیے کہ معاشرے کو جہالت کی تاریکی سے نکالنا ہی سب سے افضل ترین جہاد ہے ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ اشاعتیں

سلام اردو سے ​​مزید
Close
Back to top button