آپ کا سلاماردو شاعریاردو غزلیاتعثمان اقبال خان

رہنمائی کے لئے ہم نے سہارا باندھا

عثمان اقبال خان کی ایک اردو غزل

رہنمائی کے لئے ہم نے سہارا باندھا
گھر سے جاتے ہوئے گٹھڑی میں ستارا باندھا

اب کوئی ورد بتا مجھ کو یہ وحشت جائے
عشق تعویذ بہت میں نے اتارا باندھا

رنگ بھرنے چلے آئے وہیں منظر سارے
جس طرح پر تری نظروں نے اشارہ باندھا

جس نے رکھا مری آنکھوں میں سمندر پہلے
اس نے اطراف میں پلکوں سے کنارا باندھا

نم اٹھایا ہے کسی آنکھ سے شب نے عثمان
تب کہیں تیرگی میں کوئی نظارا باندھا

عثمان اقبال خان

عثمان اقبال خان

عثمان اقبال خان سیالکوٹ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ اشاعتیں

سلام اردو سے ​​مزید
Close
Back to top button