A True Salam To Urdu Literature

Mein Ne Bhi Us Se Hath Milaya

A Ghazal By Tasleem Ikraam

میں نے بھی اس سے ہاتھ ملایا تھا اور بس
وہ شخص میرے خواب میں آیا تھا اور بس

وہ پیکرِ جمال بھی اک شاہکار تھا
فرصت میں جس کو رب نے بنایا تھا اور بس

دل کی تمام دھڑکنیں بہکی ہوئی سی تھیں
سارا خمار اس نے چڑھایا تھا اور بس

میں نیند میں بدل نہ لوں کروٹ اسی لئے
سینے سے اس نے مجھ کو لگایا تھا اور بس

دامن چھڑا کے جانے کو تیار تھا وہ شخص
میں نے پکڑ کے پاس بٹھایا تھا اور بس

Leave A Reply

Your email address will not be published.

Recommended Salam
Some Anecdotes Of Sheikh Nasikh