A True Salam To Urdu Literature

Mein Kabhi Daam-e-Mohabbat

A Ghazal By Malik Ateeq

میں کبھی دامِ محبت میں نہیں آیا ہوں
اس لیے عالمِ وحشت میں نہیں آیا ہوں

گرمئی عشق کی لذت نہیں چھوٹی مجھ سے
دنیا داروں کی نصیحت میں نہیں آیا ہوں

جنگ جیتے ہیں مرے دم سے ہی لشکر والے
میں کوئی مالِ غنیمت میں نہیں آیا ہوں

مے کدے میں مجھے کچھ دیر پڑا رہنے دو
میں ابھی اپنی طبیعت میں نہیں آیا ہوں

ہجر پہلے بھی کئی بار سہا ہے لیکن
میں کبھی اتنی مصیبت میں نہیں آیا ہوں

Leave A Reply

Your email address will not be published.

Recommended Salam
An Urdu Funny Writing By Yousafi