- Advertisement -

لگ کے دیـوار سـے ہــے کـھڑا آئنـہ

عمران سیفی کی اردو غزل

لگ کے دیـوار سـے ہــے کـھڑا آئنـہ
دیکھ لے تجھ کو دے گا دعا آئنـہ

حُسن والے تجھے لُوٹنےآئیں گے
گر بچــا سکتا ہے تو بچــا آئنـہ

بادشاہا گــداگـر کو سـکے نـہ دے
گــر دِلاسـکتـا ہــے تــو دِلا آئنـہ

ریت یوں بھی نچوڑی نہیں جائے گی
میـں تـو کہتـا ہـوں اس کـا بـنا آئـنـہ

میـں دکـھائی نہیـں دے رہـا شـہر کـو
اب مجـھے دیـکھـتا ہـوں مـیں یا آئـنـہ

عمران سیفی

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

سلام اردو سے منتخب سلام
عمران سیفی کی اردو غزل