اردو غزلیاتایلزبتھ کورین موناشعر و شاعری

خوشی کی ملی یہ سزا رفتہ رفتہ

ایلزبتھ کورین مونا کی ایک اردو غزل

خوشی کی ملی یہ سزا رفتہ رفتہ

تعارف غموں سے ہوا رفتہ رفتہ

تھی چہرے کی رنگت تو نظروں کے آگے

چلا رنگ دل کا پتہ رفتہ رفتہ

بھلائی کئے جا یقیں رب پہ رکھ کر

وہ دیتا ہے سب کو صلہ رفتہ رفتہ

سنی بھوکے بچے نے جب ماں کی لوری

تو رو رو کے وہ سو گیا رفتہ رفتہ

ترے بن بھی کٹ جائے گی عمر لیکن

چھڑا اپنا دامن ذرا رفتہ رفتہ

نظر جو ملی دل ہوا راکھ جل کر

دھواں پھر اسی سے اٹھا رفتہ رفتہ

چمن میں کھلیں ہنستے ہنستے جو کلیاں

تو خوشبو سے مہکی فضا رفتہ رفتہ

نہ گھبراؤ موناؔ پریشانیوں سے

اثر لائے گی ہر دعا رفتہ رفتہ

ایلزبتھ کورین مونا

سائٹ ایڈمن

’’سلام اردو ‘‘،ادب ،معاشرت اور مذہب کے حوالے سے ایک بہترین ویب پیج ہے ،جہاں آپ کو کلاسک سے لے جدیدادب کا اعلیٰ ترین انتخاب پڑھنے کو ملے گا ،ساتھ ہی خصوصی گوشے اور ادبی تقریبات سے لے کر تحقیق وتنقید،تبصرے اور تجزیے کا عمیق مطالعہ ملے گا ۔ جہاں معاشرتی مسائل کو لے کر سنجیدہ گفتگو ملے گی ۔ جہاں بِنا کسی مسلکی تعصب اور فرقہ وارنہ کج بحثی کے بجائے علمی سطح پر مذہبی تجزیوں سے بہترین رہنمائی حاصل ہوگی ۔ تو آئیے اپنی تخلیقات سے سلام اردوکے ویب پیج کوسجائیے اور معاشرے میں پھیلی بے چینی اور انتشار کو دورکیجیے کہ معاشرے کو جہالت کی تاریکی سے نکالنا ہی سب سے افضل ترین جہاد ہے ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ اشاعتیں

سلام اردو سے ​​مزید
Close
Back to top button