آپ کا سلاماردو نظمشعر و شاعرینیل احمد

خودی کا راز

نیل احمد کی ایک اردو نظم

خودی کا راز

میری ہر فکر میں طوفان کی طغیانی ہے

اور مرے شوق میں جذبوں کی فراوانی ہے

یوں جنوں بہتا ہے دریا کی روانی جیسے

اور مری سوچ میں پلتی ہے کہانی جیسے

میں نے تو ہمت مردان خدا سیکھی ہے

میں نے ٹوٹے ہوئے لہجوں کی دعا سیکھی ہے

میں نے ہر رنگ کی خوشبو کی ادا سیکھی ہے

میں نے ہر ظاہر و باطل کا اٹھایا پردہ

اور تسخیر زمانہ کی لگن دل میں لئے

اپنے ہاتھوں میں مشقت کے کڑے پہنے ہیں

میں نے ہر عقل و خرد فہم و فراست کا سہارا لے کر

یوں زمانے کو برتنے کے ہنر سیکھے ہیں

میں نے جانے ہیں سبھی راز نہاں اور جہاں

اور جانا ہے خودی ہے تو مکاں میرا ہے

آسماں میرا

زمیں میری

جہاں میرا ہے

نیل احمد

سائٹ ایڈمن

’’سلام اردو ‘‘،ادب ،معاشرت اور مذہب کے حوالے سے ایک بہترین ویب پیج ہے ،جہاں آپ کو کلاسک سے لے جدیدادب کا اعلیٰ ترین انتخاب پڑھنے کو ملے گا ،ساتھ ہی خصوصی گوشے اور ادبی تقریبات سے لے کر تحقیق وتنقید،تبصرے اور تجزیے کا عمیق مطالعہ ملے گا ۔ جہاں معاشرتی مسائل کو لے کر سنجیدہ گفتگو ملے گی ۔ جہاں بِنا کسی مسلکی تعصب اور فرقہ وارنہ کج بحثی کے بجائے علمی سطح پر مذہبی تجزیوں سے بہترین رہنمائی حاصل ہوگی ۔ تو آئیے اپنی تخلیقات سے سلام اردوکے ویب پیج کوسجائیے اور معاشرے میں پھیلی بے چینی اور انتشار کو دورکیجیے کہ معاشرے کو جہالت کی تاریکی سے نکالنا ہی سب سے افضل ترین جہاد ہے ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ اشاعتیں

سلام اردو سے ​​مزید
Close
Back to top button