آپ کا سلاماردو شاعریاردو غزلیاترانا عثمان احامر

جڑ کو خود کاٹنا پاتال پہ گریہ کرنا

رانا عثمان احمر کی ایک اردو غزل

جڑ کو خود کاٹنا پاتال پہ گریہ کرنا
پیڑ کے پھل سے نہیں چھال پہ گریہ کرنا

جب کسانوں کو بھی دو وقت کا آٹا نے ملے
ان کا بنتا ھے تری چال پہ گریہ کرنا

ہارے لشکر سے ھوں اتنا تو مرا بنتا ھے
تیر، تلوار کبھی ڈھال پہ گریہ کرنا

خواب پنسل کی لکھائی کی طرح پھیلتے ہیں
آنکھ نم ہوئی تو رومال پہ گریہ کرنا

روح کمرے میں نہیں بند ھے الماری میں
پاؤں باہر ہوں تو کیا شال پہ گریہ کرنا

رانا عثمان احامر

" مختصر تعارف " نام ۔ محمد عثمان انور قلمی نام ۔ رانا عثمان احامر تاریخ پیدائش ۔ 1990۔08۔04 شہر ۔ چوبارہ سیالکوٹ پاکستان۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ اشاعتیں

سلام اردو سے ​​مزید
Close
Back to top button