اردو نظمرام پرساد بسملشعر و شاعری

چرچہ اپنے قتل کا

رام پرساد بسمل کی ایک اردو نظم

چرچہ اپنے قتل کا اب دشمنوں کے دل میں ہے!
دیکھنا ہے یہ تماشہ کون سی منزل میں ہے ؟

قوم پر قربان ہونا سیخ لو اے ہندییو!
زندگی کا رازے-مجمر کھنجرے-قاتل میں ہے!

ساہلے-مقصود پر لے چل کھدارا ناکھدا!
آج ہندوستان کی کشتی بڑی مشکل میں ہے!

دور ہو اب ہند سے تاریکی-اے-بگجو-ہسدو،
اب یہی حسرت یہی ارماں ہمارے دل میں ہے!

بامے-رپھئت پر چڑھا دو دیش پر ہوکر فنا،
‘بسمل’ اب اتنی ہوش باقی ہمارے دل میں ہے!

(راز=بھید، ساہلے-مقصود=من-چاہیا کنارہ،
ناکھدا=ملاح، تاریکی-اے-بگجو-ہسدو=ایرکھا-ساڑے
دا ہنیرا، ہوش=چاہ)

 

رام پرساد بسمل

سائٹ ایڈمن

’’سلام اردو ‘‘،ادب ،معاشرت اور مذہب کے حوالے سے ایک بہترین ویب پیج ہے ،جہاں آپ کو کلاسک سے لے جدیدادب کا اعلیٰ ترین انتخاب پڑھنے کو ملے گا ،ساتھ ہی خصوصی گوشے اور ادبی تقریبات سے لے کر تحقیق وتنقید،تبصرے اور تجزیے کا عمیق مطالعہ ملے گا ۔ جہاں معاشرتی مسائل کو لے کر سنجیدہ گفتگو ملے گی ۔ جہاں بِنا کسی مسلکی تعصب اور فرقہ وارنہ کج بحثی کے بجائے علمی سطح پر مذہبی تجزیوں سے بہترین رہنمائی حاصل ہوگی ۔ تو آئیے اپنی تخلیقات سے سلام اردوکے ویب پیج کوسجائیے اور معاشرے میں پھیلی بے چینی اور انتشار کو دورکیجیے کہ معاشرے کو جہالت کی تاریکی سے نکالنا ہی سب سے افضل ترین جہاد ہے ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ اشاعتیں

سلام اردو سے ​​مزید
Close
Back to top button