- Advertisement -

Bichar Gaya He Tu Ub

An Urdu Ghazal By Saud Usmani

بچھڑ گیا ہے تو اب اس سے کچھ گلا بھی نہیں

کہ سچ تو یہ ہے وہ اک شخص میرا تھا بھی نہیں

میں چاہتا ہوں اسے اور چاہنے کے سوا

مرے لیے تو کوئی اور راستا بھی نہیں

عجیب راہگزر تھی کہ جس پہ چلتے ہوئے

قدم رکے بھی نہیں راستا کٹا بھی نہیں

دھواں سا کچھ تو میاں برف سے بھی اٹھتا ہے

سو دل جلوں کا یہ ایسا کوئی پتا بھی نہیں

رگوں میں جمتے ہوئے خون کی طرح ہے سعود

وہ حرف ہجر جو اس نے ابھی کہا بھی نہیں

سعود عثمانی

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

سلام اردو سے منتخب سلام
An Urdu nazam By Saud Usmani