- Advertisement -

Bhichi Rehti Hay Saara Saal

A Ghazal By Iftikhar Shahid

بچھی رہتی ہے سارا سال جس پر برف کی چادر
اُسی کہسار سے دریاوں کے دھارے نکلتے ہیں

بھری دوپہر میں جزبوں کی تو نے شام کر ڈالی
خبر نہ تھی کہ اس بستی میں سورج یوں بھی ڈھلتے ہیں

سنو! یہ ڈوبتا سورج ہمیں پیغام دیتا ہے
چلو اب شام ڈھلتی ہے چلو اب گھر کو چلتے ہیں

اجالا روز ہوتا ہے دلِ برباد میں شاھد
منڈیروں پر تری یادوں کے دیپک اب بھی جلتے ہیں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

سلام اردو سے منتخب سلام
A Naat Mubaraka By Shehzad Mujadadi