اردو نظمرام پرساد بسملشعر و شاعری

ہے ماتر یبھومی !

رام پرساد بسمل کی ایک اردو نظم

ہے ماتریبھومی ! تیرے چرنوں میں شر نواؤں ۔
میں بھکتی بھینٹ اپنی، تیری شرن میں لاؤں ۔

ماتھے پے تو ہو چندن، چھاتی پے تو ہو مالا ؛
جہوا پے گیت تو ہو میرا، تیرا ہی نام گاؤں ۔

جسسے سپوت اپجیں، شری رام-کرشن جیسے؛
اس دھول کو میں تیری نج شیش پے چڑھاؤں ۔

مائی سمدر جسکی پد رج کو نتی دھوکر؛
کرتا پرنام تجھکو، میں وے چرن دباؤں ۔

سیوا میں تیری ماتا ! میں بھیدبھاو تجکر؛
وہ پنی نام تیرا، پرتیدن سنوں سناؤں ۔

تیرے ہی کام آؤں، تیرا ہی منتر گاؤں۔
من اور دیہہ تجھ پر بلیدان میں جاؤں ۔

(نج=اپنے، پد رج=چرن-دھوڑ)

 

رام پرساد بسمل 

سائٹ ایڈمن

’’سلام اردو ‘‘،ادب ،معاشرت اور مذہب کے حوالے سے ایک بہترین ویب پیج ہے ،جہاں آپ کو کلاسک سے لے جدیدادب کا اعلیٰ ترین انتخاب پڑھنے کو ملے گا ،ساتھ ہی خصوصی گوشے اور ادبی تقریبات سے لے کر تحقیق وتنقید،تبصرے اور تجزیے کا عمیق مطالعہ ملے گا ۔ جہاں معاشرتی مسائل کو لے کر سنجیدہ گفتگو ملے گی ۔ جہاں بِنا کسی مسلکی تعصب اور فرقہ وارنہ کج بحثی کے بجائے علمی سطح پر مذہبی تجزیوں سے بہترین رہنمائی حاصل ہوگی ۔ تو آئیے اپنی تخلیقات سے سلام اردوکے ویب پیج کوسجائیے اور معاشرے میں پھیلی بے چینی اور انتشار کو دورکیجیے کہ معاشرے کو جہالت کی تاریکی سے نکالنا ہی سب سے افضل ترین جہاد ہے ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ اشاعتیں

Back to top button