- Advertisement -

بات کوئی باریک نہیں ہے

ڈاکٹر فخر عباس کی مزاحیہ شاعری

بات کوئی باریک نہیں ہے
معدہ تیرا ٹھیک نہیں ہے

فیس ہماری دے دے ظالم
مانگی ہم نے بھیک نہیں ہے

اچھے آپ فزیشن ہیں تو
مستقبل تاریک نہیں ہے

شوگر نے پھر کیوں ہونا تھا
موت اگر نزدیک نہیں ہے

میری مانیں، فکر کریں مت!
آپ کا بچہ ویک نہیں ہے

کاکا ہی تو لیک ہوا ہے
یہ پانامہ لیک نہیں ہے

ڈاکٹر فخر عباس

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

سلام اردو سے منتخب سلام
ڈاکٹر فخر عباس کی ایک اردو غزل