اردو نظمرام پرساد بسملشعر و شاعری

اروزے کامیابی پر کبھی

رام پرساد بسمل کی ایک اردو نظم

اروزے کامیابی پر کبھی تو ہندستاں ہوگا ۔
رہا سییاد کے ہاتھوں سے اپنا آشیاں ہوگا ۔

چکھایینگے مزہ بربادی-اے-گلشنی کا گلچیں کو ۔
بہار آییگی اس دن جب کہ اپنا باگواں ہوگا ۔

وطن کی آبرو کا پاس دیکھیں کون کرتا ہے ۔
سنا ہے آج مقتل میں ہمارا امتہاں ہوگا ۔

جدا مت ہو میرے پہلو سے اے دردے-وطنے ہرگز ۔
ن جانے بعد مردن میں کہاں اور تو کہاں ہوگا ۔

یہ آیے دن کی چھیڑ اچھی نہیں اے کھنجرے-قاتل!
بتا کب فیصلہ انکے ہمارے درمیاں ہوگا ۔

شہیدوں کی چتاؤں پر جڑیگیں ہر برس میلے ۔
وطن پر مرنے والوں کا یہی باقی نشاں ہوگا ۔

الٰہی وہ بھی دن ہوگا جب اپنا راجی دیکھینگے ۔
جب اپنی ہی جمیں ہوگی اور اپنا آسماں ہوگا

(عروض=ترقی، سییاد=شکاری، آشیاں=آلھنا،گھر،
گلچیں=پھلیرا،پھلّ توڑن والا، مقتل=قتل گاہ)

 

رام پرساد بسمل

سائٹ ایڈمن

’’سلام اردو ‘‘،ادب ،معاشرت اور مذہب کے حوالے سے ایک بہترین ویب پیج ہے ،جہاں آپ کو کلاسک سے لے جدیدادب کا اعلیٰ ترین انتخاب پڑھنے کو ملے گا ،ساتھ ہی خصوصی گوشے اور ادبی تقریبات سے لے کر تحقیق وتنقید،تبصرے اور تجزیے کا عمیق مطالعہ ملے گا ۔ جہاں معاشرتی مسائل کو لے کر سنجیدہ گفتگو ملے گی ۔ جہاں بِنا کسی مسلکی تعصب اور فرقہ وارنہ کج بحثی کے بجائے علمی سطح پر مذہبی تجزیوں سے بہترین رہنمائی حاصل ہوگی ۔ تو آئیے اپنی تخلیقات سے سلام اردوکے ویب پیج کوسجائیے اور معاشرے میں پھیلی بے چینی اور انتشار کو دورکیجیے کہ معاشرے کو جہالت کی تاریکی سے نکالنا ہی سب سے افضل ترین جہاد ہے ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ اشاعتیں

سلام اردو سے ​​مزید
Close
Back to top button