آپ کا سلاماردو نظمخدیجہ آغاشعر و شاعری

آج کل آزاد خیال لڑکیاں

خدیجہ آغا کی آزاد نظم

آج کل آزاد خیال لڑکیاں
خود کی شجر کو کلہاڈی مارتی ھے
بڑوں کا احترام کرنا آزاد لڑکیوں کا شیوہ نہیں
آج کی آزادی لڑکیاں اپنا کل نہیں دیکھتی
رہنا ہمیں اپنے شجر کے ساتھ نہیں
آزاد رہنا یوں اپنی زمہ داری سے کترانہ
من میں ہنس کر کہنا دیکھا میرا وار ھے
پر یاد نہیں کل تیری شجر کل تمہیں عزیز رکھے گی نہیں
آج کی لڈکی فکر اپنے کل کی
آج جو بوے گی کل تو کاٹے گی
شجر کو ہر موسم کا احساس دلا
اپنا آج کل اور مسقبل کا بھی خیال رکھ
آج کی لڑکی موسم چار ھے
اس کا احساس ھے
ٹھیک زندگی میں ویسے ہی رنگ ہونگے
آج کی لڑکی شجر کا خیال پر اترا مت
تمارا بھی دن آئے گا لیکن خیال رکھ

خدیجہ آغا

سائٹ ایڈمن

’’سلام اردو ‘‘،ادب ،معاشرت اور مذہب کے حوالے سے ایک بہترین ویب پیج ہے ،جہاں آپ کو کلاسک سے لے جدیدادب کا اعلیٰ ترین انتخاب پڑھنے کو ملے گا ،ساتھ ہی خصوصی گوشے اور ادبی تقریبات سے لے کر تحقیق وتنقید،تبصرے اور تجزیے کا عمیق مطالعہ ملے گا ۔ جہاں معاشرتی مسائل کو لے کر سنجیدہ گفتگو ملے گی ۔ جہاں بِنا کسی مسلکی تعصب اور فرقہ وارنہ کج بحثی کے بجائے علمی سطح پر مذہبی تجزیوں سے بہترین رہنمائی حاصل ہوگی ۔ تو آئیے اپنی تخلیقات سے سلام اردوکے ویب پیج کوسجائیے اور معاشرے میں پھیلی بے چینی اور انتشار کو دورکیجیے کہ معاشرے کو جہالت کی تاریکی سے نکالنا ہی سب سے افضل ترین جہاد ہے ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ اشاعتیں

Back to top button