اردو غزلیاتشعر و شاعریعلی زریون

ادائے عشق ہوں پوری انا کے ساتھ ہوں میں

علی زریون کی ایک اردو غزل

ادائے عشق ہوں پوری انا کے ساتھ ہوں میں

خود اپنے ساتھ ہوں یعنی خدا کے ساتھ ہوں میں

مجاوران ہوس تنگ ہیں کہ یوں کیسے

بغیر شرم و حیا بھی حیا کے ساتھ ہوں میں

سفر شروع تو ہونے دے اپنے ساتھ مرا

تو خود کہے گا یہ کیسی بلا کے ساتھ ہوں میں

میں چھو گیا تو ترا رنگ کاٹ ڈالوں گا

سو اپنے آپ سے تجھ کو بچا کے ساتھ ہوں میں

درود بر دل وحشی سلام بر تپ عشق

خود اپنی حمد خود اپنی ثنا کے ساتھ ہوں میں

یہی تو فرق ہے میرے اور ان کے حل کے بیچ

شکایتیں ہیں انہیں اور رضا کے ساتھ ہوں میں

میں اولین کی عزت میں آخرین کا نور

وہ انتہا ہوں کہ ہر ابتدا کے ساتھ ہوں میں

دکھائی دوں بھی تو کیسے سنائی دوں بھی تو کیوں

ورائے نقش و نوا ہوں فنا کے ساتھ ہوں میں

بہ حکم یار لویں قبض کرنے آتی ہے

بجھا رہی ہے؟ بجھائے ہوا کے ساتھ ہوں میں

یہ صابرین محبت یہ کاشفین جنوں

انہی کے سنگ انہیں اولیا کے ساتھ ہوں میں

کسی کے ساتھ نہیں ہوں مگر جمال الہ

تری قسم ترے ہر مبتلا کے ساتھ ہوں میں

زمانے بھر کو پتا ہے میں کس طریق پہ ہوں

سبھی کو علم ہے کس دل ربا کے ساتھ ہوں میں

منافقین تصوف کی موت ہوں میں علیؔ

ہر اک اصیل ہر اک بے ریا کے ساتھ ہوں میں

علی زریون

سائٹ ایڈمن

’’سلام اردو ‘‘،ادب ،معاشرت اور مذہب کے حوالے سے ایک بہترین ویب پیج ہے ،جہاں آپ کو کلاسک سے لے جدیدادب کا اعلیٰ ترین انتخاب پڑھنے کو ملے گا ،ساتھ ہی خصوصی گوشے اور ادبی تقریبات سے لے کر تحقیق وتنقید،تبصرے اور تجزیے کا عمیق مطالعہ ملے گا ۔ جہاں معاشرتی مسائل کو لے کر سنجیدہ گفتگو ملے گی ۔ جہاں بِنا کسی مسلکی تعصب اور فرقہ وارنہ کج بحثی کے بجائے علمی سطح پر مذہبی تجزیوں سے بہترین رہنمائی حاصل ہوگی ۔ تو آئیے اپنی تخلیقات سے سلام اردوکے ویب پیج کوسجائیے اور معاشرے میں پھیلی بے چینی اور انتشار کو دورکیجیے کہ معاشرے کو جہالت کی تاریکی سے نکالنا ہی سب سے افضل ترین جہاد ہے ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ اشاعتیں

سلام اردو سے ​​مزید
Close
Back to top button