- Advertisement -

Adawtun Main Jo Khalq e Khuda

An Urdu ghazal by Faisal Ajmi

عداوتوں میں جو خلقِ خدا لگی ہوئی ہے

محبتوں کو کوئی بدّعا لگی ہوئی ہے

پناہ دیتی ہے ہم کو نشے کی بے خبری

ہمارے پیچ ہے خبر کی بلا لگی ہوئی ہے

کمال ہے نظر انداز کرنا دریا کو

اگرچہ پیاس بھی بے انتہا لگی ہوئی ہے

پلک جھپکتے ہی خواہش نے کینوس بدلا

تلاش کرنے میں چہرہ نیا لگی ہوئی ہے

تو آفتاب ہے جنگل کو دھوپ سے بھر دے

تری نظر مرے خیمے پہ کیا لگی ہوئی ہے

علاج کے لیۓ کس کو بلائیے صاحب

ہمارے ساتھ ہماری انا لگی ہوئی ہے

فیصل عجمی

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

سلام اردو سے منتخب سلام
An Urdu ghazal by Faisal Ajmi